کفایت شعاری کا عالمی دن : پیسہ بچانے کے لیے مددگار گر جانیں

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) کیا آپ جانتے ہیں آج دنیا بھر میں کفایت شعاری کا عالمی دن یعنی ورلڈ سیونگز ڈے منایا جارہا ہے۔ اس دن کو منانے کا آغاز سنہ 1924 میں ورلڈ سوسائٹی آف سیونگ بینکس کی جانب سے کیا گیا تاکہ لوگوں میں کفایت شعاری اور پیسے جمع کرنے کا شعور اجاگر کیا جاسکے۔ آج اسی دن کی مناسبت سے ہم آپ کو پیسے بچانے کی کچھ تجاویز بتا رہے ہیں۔جس کی وجہ سے آپ اچانک نوکری چلے جانے، کسی ہنگامی صورتحال کا شکار ہونے یا ریٹائر منٹ کے بعد بھی مالی طور پر کسی پریشانی کا شکار

نہ ہوں۔ یہ بات یاد رکھیں کہ جب بھی آپ کمانا شروع کریں پہلے دن سے جمع کرنے کی عادت ڈالیں بھلے وہ کتنی ہی چھوٹی رقم کیوں نہ ہو۔ جیسے جیسے آپ کی آمدن میں اضافہ ہوتا جائے ویسے ویسے اپنی سیونگز کی رقم کو بڑھاتے جائیں جو مستقبل میں آپ کے کام آسکتی ہے یا آپ اس پیسے سے کہیں سرمایہ کاری کر کے اپنی آمدنی میں مزید اضافہ کرسکتے ہیں۔ آئیں دیکھتے ہیں وہ تجاویز کیا ہیں۔ بچت کرنے کے لیے یہ اصول اپنا لیں اخراجات پر نظر رکھیں ہمیشہ کسی بھی چیز پر پیسے خرچ کرتے ہوئے پہلے تو یہ سوچیں کہ وہ شے آپ کے لیے کتنی ضروری ہے۔ اگر آپ کسی غیر ضروری اور مہنگی شے پر خرچ کرنے جارہے ہیں تو یقیناً یہ ایک دانش مندانہ اقدام نہیں ہے۔ ہنگامی صورتحال کے لیے تیار رہیں ہر ماہ کچھ رقم کسی جگہ محفوظ کر دینے کی عادت اس وقت آپ کے کام آئے گی جب اچانک آپ کسی ہنگامی صورتحال سے دو چار ہوں، آپ کی ملازمت چلی جائے یا کاروبار میں گھاٹا ہوجائے۔ جمع شدہ رقم کو ایک علیحدہ اکاؤنٹ میں محفوظ رکھیں اور اس اکاؤنٹ کو بالکل بھول جائیں۔ آمدنی میں اضافے کی صورت میں اگر آپ کی تنخواہ یا آمدنی میں اضافہ ہوا ہے تو اپنی سیونگ کی مقدار بھی بڑھا دیں۔ اس کا یہ مطلب نہیں کہ آپ اپنی جائز خواہشات کی تکمیل یا تفریحات نہ کریں۔بلکہ دونوں میں توازن رکھیں۔ ایک ہی جگہ سرمایہ کاری سے گریز اپنی تمام جمع پونجی کو ایک ہی جگہ محفوظ رکھنے، یا ایک ہی جگہ پر سرمایہ کاری کرنے سے گریز کریں۔ اگر آپ نے کسی ایک ہی کاروبار میں بہت ساری سرمایہ کاری ہے تو نقصان کی صورت میں آپ اپنی تمام جمع پونجی سے ہاتھ دھو بیٹھیں گے۔ ذہانت سے سرمایہ کاری کریں پیسے کو محفوظ رکھنے کا آسان طریقہ سرمایہ کاری کرنا ہے۔اس سے نہ صرف آپ کی اصل رقم محفوظ رہتی ہے بلکہ وقتاً فوقتاً اضافی رقم بھی حاصل ہوتی ہے۔ لیکن سرمایہ کاری کرتے ہوئے ذہانت سے کام لیں۔ کسی بھی جگہ سرمایہ کاری کرنے سے قبل اس کاروبار کے پھیلاؤ اور مستقبل کے بارے میں تحقیق کریں اور پڑھیں۔ ان افراد سے گفتگو کریں جو پہلے سے اس کاروبار میں سرمایہ کاری کر چکے ہوں۔ اس کے بعد ہی سرمایہ کاری کرنے کا فیصلہ کریں۔ آمدنی میں اضافہ کریں۔بعض لوگ جب معاشی بحران کا شکار ہوتے ہیں تو وہ اپنے اخراجات کو کم کر کے غربت میں زندگی گزارنے لگتے ہیں۔ یہ ایک غلط نقطہ نظر ہے۔ اس کے برعکس ان ذرائع پر غور کریں جہاں سے آپ جائز طریقے سے اپنی آمدنی میں اضافہ کرسکیں۔ صلاحیتوں کا بھرپور استعمال کریں، محنت کریں، نوجوانی میں اپنی استعداد سے بڑھ کر کام کریں، کام سے ایمانداری اور مخلصی کا مظاہرہ کریں تو یقیناً آپ بھی معاشی طور پر خوشحال ہوجائیں گے۔

موضوعات:

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*